Natural Anti Cancer Plant for Smokers

Closeup of hand holding cigarr

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) سگریٹ نوش افراد کو طویل عرصے سے کسی ایسی دوا کا انتظار تھا جو انہیں سگریٹ کے مضراثرات اوراس کی وجہ سے کینسر ہونے سے بچا سکے۔ اب سائنسدانوں نے ان افراد کو خوشخبری سنا دی ہے۔ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق سائنسدانوں نے ایک ایسے پودے کا پتہ چلا لیا ہے جو سگریٹ میں موجود کینسر کا باعث بننے والے مادے کے مضراثرات زائل کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔اس پودے کا نام سلاد آبی(Watercress) ہے جو ہمارے ہاں نہروں و دیگر آبی جگہوں پر بکثرت پایا جاتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ دریافت امریکی ریاست پنسلوانیا کی یونیورسٹی آف پٹسبرگ(Pittsurgh) کے سائنسدانوں نے کی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ سلاد آبی کا عرق سگریٹ کے دھوئیں میں موجود مضرصحت مادوں کا اثر ختم کر دیتا ہے ، جس سے سگریٹ پینے والے افراد کینسر و دیگر بیماریوں سے محفوظ رہ سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ یہ عرق ان افراد کی سگریٹ کی عادت ختم کرنے میں بھی معاون ثابت ہو سکتا ہے۔ریسرچ ٹیم کے رکن ڈاکٹر جیان من یوآن(Jian Min Yuan)کا کہنا تھا کہ ”نکوٹین کی لت بہت بری ہوتی ہے اور اس کی عادت اتنی جلدی ختم نہیں ہو سکتی۔ لہٰذا سگریٹ پینے والے افراد اسے چھوڑنے کی کوشش کے ساتھ ساتھ سلاد آبی کے ذریعے سگریٹ کے مضراثرات سے بچ سکتے ہیں۔

سائنسدانوں نے 82سگریٹ نوشوں پر سلاد آبی کے اثرات کے تجربات کیے۔ انہوں نے سگریٹ کے عادی ان افراد کو 10ملی گرام سلادآبی کا رس 1ملی لیٹر زیتون کے تیل میں ملا کر دن میں چار بار پلایا اور یہ مشق ایک ہفتے تک جاری رکھی۔اس ایک ہفتے میں سگریٹ کے عادی ان افراد میں کینسر کا باعث بننے والے مادے نائیٹروزامن کیٹون(Nitrosamine Ketone) کی مقدار میں 7.7فیصد کمی واقع ہو گئی۔اس کے علاوہ ان افراد میں بینزین(Benzene)کے مضراثرات میں 24.6فیصد اور ایکرولین(Acrolein) میں 15.1فیصد کمی واقع ہوئی۔ سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ اگر سگریٹ نوش افراد اس عرق کا مستقل استعمال جاری رکھیں تو بہت زیادہ حد تک سگریٹ کے دھوئیں کے مضراثرات سے بچا جا سکتا ہے۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*