Ghar main Gulab Ki Pattiyon Say Gulkand banane ka asan tariqa aur fawaid

گلاب کی پتیوں سے تیار گلقند بنانے کا طریقہ

پھول اپنی مختصر زندگی میں کتنے خوشگوار لمحات چھوڑ جاتے ہیں کھلنے سے پہلے سے لے کر شاخ پر مرجھانے تک مختلف قسم کی کیفیات سے جلوہ افروز ہوتے ہیں۔ ان کی کشش‘ دیدہ زیبی‘ خوشبو نہ صرف انسانوں کو اپنی طرف کھینچتی ہے بلکہ پرندے اور حشرات الارض جو پر رکھتے ہیں دیوانے ہوکر ان پر منڈلاتے ہیں اور ان سے خاطر خواہ اپنی خوراکی ضروریات پورے کرتے ہیں۔
پھول نہ صرف تازگی میں انسانی بیمار زندگی میں سجاوٹ کا کام دیتے ہیں بلکہ سوکھے ہوئے بھی اپنے خواص کی طاقت سے بیمار زندگی کو ہرا بھرا کرتے ہیں‘ آئیے! آج ہم گلاب کے پھولوں کے فوائد کے بارے میں جانکاری حاصل کرتے ہیں۔
گلاب کا پھول:ِ
بے حد خوبصورت پھول ہے‘ عربی میں کوورد کہتے ہیں‘ نفاست اور خوشبو کے لحاظ سے اس کو پھولوں کا راجہ کہاجاتا ہے۔ قدرت نے اس میں بے شمار خوشیاں سمورکھی ہیں‘ بہت سے امراض کیلئے اس میں شفاء ہے۔
خواص کے لحاظ سے قبض کشا ہے‘ پٹھوں اور ٹشوز کو مضبوط کرتا ہے‘ دل کی اکثر بیماریوں میں مفید ہے‘ دل و دماغ کو فرحت دیتا ہے‘ حکماء نے اس کے مزاج کو گرم تر کسی نے سردخشک اور کسی نے معتدل بتایا ہے علم سیارگان کی رو سے اس کو مشتری ستارہ سے منسوب کیا گیا ہے۔
گلقند:
دیسی گلاب کے پھول کی پتیاں ایک کلو‘ شکر (چینی) ایک کلو دونوں کو کھلے برتن میں ڈال کر ہاتھوں سے خوب مل کر مکس کریں پھر اس کو صاف جگہ پر دھوپ میں تین چار گھنٹوں کیلئے رکھ دیں۔ چینی اس میں اچھی طرح سے گھل جائے گی‘ اس کو شیشے یا اچھے پلاسٹک کے مرتبان میں محفوظ رکھیں۔
خوراک:
دو تولہ پانی یا دودھ کے ساتھ لے سکتے ہیں۔
فوائد:
قبض کشا ہے معدہ کی فالتورطوبتوں کو ختم کرتا ہے معدہ کو طاقت دیتا ہے‘ دل و دماغ کو فرحت دیتا ہے۔
شہد والی گلقند:
دیسی گلاب کی پتیاں ایک کلو‘ شہد 500 گرام‘ دونوں کو کھلے برتن میں ڈال کر اچھی طرح سے ہاتھوں سے ملیں جب دونوں اچھی طرح سے مل جائیں تو اس کو پانچ چھ گھنٹہ کیلئے دھوپ میں رکھ دیں اور صاف مرتبان میں محفوظ کرلیں۔

Related Posts

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *