Dant Girne Ki Wajohat

’اگر آپ کے 2 یا اس سے زیادہ دانت گر جائیں تو اس کا مطلب ہے کہ۔۔۔‘ یہ بات آپ کی صحت کے بارے میں کیا کہتی ہے؟ سائنسدانوں نے انتہائی خطرناک بات بتادی

بچپن اور بڑھاپے میں تو سب کے دانت گرتے ہیں لیکن جس کے دانت ادھیڑ عمری میں گرنے لگیں اس کے لئے اچھی خبر نہیں۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ درمیانی عمر میں دو یا اس سے زیادہ دانتوں کا گرنا اس بات کی علامت ہے کہ آپ کو دل کی بیماری کا خطرہ ہے۔

یہ تحقیق 61ہزار سے زائد افرادپر کی گئی ہے جن کی عمر 45 سے 69 سال کے درمیان تھی اور اس تحقیق کی بناءپر سائنسدانوں کا کہنا ہے جن لوگوں کے درمیانی عمر میں دانت گرتے ہیں دوسروں کی نسبت ان میں دل کی بیماری کاخطرہ زیادہ ہوتا ہے۔ عام طور پر جوانی کی عمر کو پہنچنے پر منہ میں 32 دانت ہوتے ہیں لیکن جن لوگوں کے دانت 25 سے 30 تک پائے گئے ان میں دل کی بیماری کا خطرہ تقریباً 25 فیصد زیادہ تھا۔

میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے اس تحقیق سے نتیجہ اخذ کیا ہے کہ اگر عمومی صحت اچھی بھی ہو اور خوراک بھی ٹھیک ٹھاک ہو پھر بھی درمیانی عمر میں دانت گرنا دل کی صحت کو لاحق مسائل کی علامت ہے۔ ادھیڑ عمری میں جن کا صرف ایک دانت گرا ان میں دل کی بیماری کا خطرہ دوسروں کی نسبت زیادہ نہیں پایا گیا۔ تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ دانت گرنے سے منہ میں انفیکشن کا خطرہ بڑھ جاتا ہے اور بعدازاں اس انفیکشن کے جراثیم خون کی نالیوں تک پہنچ جاتے ہیں اور ان میں سوزش پیدا کرتے ہیں جو دل کی بیماری کا سبب بنتی ہے۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*