Banana Diet Plan for Weight Loss in Urdu

کیلے آپ کا وزن کم کرنے میں معاون ثابت ہو سکتے ہیں ۔ جی ہاں ! یہ سچ ہے کہ کیلے کی ڈائت دنیا کی بہترین ڈائٹ میں سے ایک انتہائی مقبول اور آسان ڈائٹ ہے جو آسانی سے وزن کم کرسکتی ہے ۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اس ڈائٹ سے وزن آہستہ آہستہ اور مستحکم طریقے سے کم ہوتا ہے ۔ آپ یقیناًیہ سوچ رہے ہوں گے کہ اس ڈائٹ کے تحت دن بھر صرف کیلے کھانے ہوں گے ۔ لیکن یہ غلط ہے ، معمول کی خوراک کے ہمراہ کھائے جانے والے کیلے ہی وزن میں کمی کا سبب بن جاتے ہیں ۔

اس کے لئے ایک دن میں 5سے 7کیلے کھانے ہیں ، یعنی ناشتے سے پہلے 2کیلے ، دوپہر کے کھانے سے پہلے 2کیلے اور رات کھانے کے سے پہلے 1کیلا ، جب کہ درمیان میں اگر سنیکس کی خواہش ہو تو 2کیلے کھانے ہیں ۔ جو آپ کو وزن کم کرنے کی کوشش میں مددکرے گا ۔ اضافی قاعدے کے تحت ناشتے اور دوپہر کے کھانے سے پہلے ایک کھانے کے ساتھ ایک سیب کھا سکتے ہیں ، اس کا مقصد یکسانیت کو دور کرنا ہے ۔ یہ بات یقین سے نہیں کہی جا سکتی کہ اس ڈائٹ سے آپ کا کتنا وزن کم ہوگا ، تاہم آپ کو مستحکم وزن کی کمی کا ضرور احساس ہوگا، مگر اس کے لئے آپ کو صبر سے کام لینا ہوگا۔

ڈائٹ پلان کا نمونہ :
ناشتہ :
معمول کے ناشتے سے پہلے ایک یا اپنی خواہش کے مطابق کیلے کھائیں اور کم از کم ایک گلاس نیم گرم پانی ئیں ۔

دوپہر کا کھانا :
2کیلوں کے ہمراہ اپنی پسند کا کھانا کھائیں ۔

سہہ پہر کے اسنیکس :
اگر بھو ک محسوس کریں تو سہہ پہر میں کم مقدارمیں کوئی چیز بطور اسنیک کھائیں ، تاہم اگر اس وقت بھی ایک سے دو کیلے کھائیں تو زیادہ بہتر ہے ۔

رات کا کھانا :
رات کے کھانے سے پہلے 2کیلوں کے ہمراہ اپنی پسند کا کھانا کھائیں ، تاہم کھانا رات 8بجے سے پہلے کھائیں اس کے ساتھ میٹھی ڈش کھانے کی اجازت نہیں ہے ۔

بنانا ڈائٹ کرنے والوں کو جاپانی طریقے پر عمل کرنا چاہیے ،یعنی جب پیٹ 80فیصد بھر جائے تو کھانا بند کردیں ۔ اس ڈائٹ پلان کے تحت چکنائی پر مشتمل غذا، دودھ کی بنی ہوئی مصنوعات اور نشہ آور مشروبات لینے کی ممانعت ہے ، یعنی آپ کی خوراک کم چکنائی والی ہونی چاہیے جب کہ مشروبات میں صرف سادہ پانی پینے کی اجازت ہے ۔

صبح کی کیلے کی ڈائٹ تخلیق کرنے والوں کے مطابق اگر ناشتے میں صرف کیلے اور نیم گرم پانی پیا جائے تو یہ ناشتہ وزن کی کمی کا باعث ہو سکتا ہے ۔ اس کے علاوہ آپ باقی پورے دن کچھ بھی کھا سکتے ہیں ۔ اس ڈائٹ پر عمل کرنا سادہ و آسان ہے اور اس کے نتائج بھی نسبتاً جلد نکلنا شروع ہو جاتے ہیں ۔

بنانا ڈائٹ کی کامیابی کی بہت سی وجوہات ہیں جن میں سے ایک یہ بھی ہے کہ کیلے جلدی ہضم ہوتے ہیں اور نظام ہضم کو فعال کردتے ہیں ۔ دوسری وجہ یہ بھی ہو سکتی ہے کہ کیلے میں اعلی قسم کا مزاحمتی نشاستہ ہوتا ہے ، اس نشاستے کے فائبر کاربوہائیڈریٹس کو جذب ہونے سے روکتے ہیں اور پیٹ خوب بھرا ہوا محسوس ہوتا ہے ۔ ڈائٹ کرنے والوں کو ہدایت کی جاتی ہے کہ شام کا کھانا 8بجے سے پہلے کھائیں اور رات کے کھانے کے بعد میٹھا کھانے سے پرہیز کریں ۔ اگر بھوک زیادہ لگ رہی ہے تو کسی بھی پھل کا یاک ٹکڑا کھالیں ۔ ناشتے میں کیلے کھانے اور رات کو دیر سے کھانے سے پرہیز کے علاوہ ڈائٹ کا دوسرا اصول رات کو جلدی سونا ہے کیونکہ سائنسی تحقیق بتاتی ہیں کہ نیند کی محرومی اور موٹاپے میں گہرا تعلق ہے ۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*