Badam Ke Fawaid

بادام کو صرف غذا کے طور پر استعمال نہیں کیا جاتا، بلکہ یہ ایک بہترین دوا بھی ہے۔ بادام کو دماغ کی تقویت کے لیے ایک پیش بہا چیز سمجھا جاتا ہے۔ گرمیوں میں اس کو پیس کر ٹھنڈائی کے طور پر اور جاڑوں میں جریدے کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔

بادام کی ایک قسم کڑوی بھی ہوتی ہے۔ تلخ بادام کو اگر زیادہ مقدار میں کھایا جاۓ تو معدے میں زیریلا اثر پیدا ہو سکتا ہے۔ ایک دو بادام تک تو مضائقہ نہیں لیکن زیادہ مقدار میں تلخ بادام ہرگز استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ میٹھے بادام بہت لذیذ ہوتے ہیں اورانہیں ذیباطیس کے مریض بھی اعلی غذا کے طور پر استعمال کر سکتے ہیں۔ میٹھے بادام سے روغن بھی نکالا جاتا ہے جسے تقویت دماغ کے لیے بہترین جانا گیا ہے۔

بادام غذا کا نہایت اہم جزو ہے اور خشک پھلوں میں بھی بادام کو امتیازی حیسیت حاصل ہے۔ بادام ایسے حیات بخش اجزاء سے بھرا ہوا ہے جو جسمانی ساخت کی تعمیر اور درازی عمر کے کفیل ہوتے ہیں۔

بادام میں موجود غذائیت

غذائی اعتبار سے بادام میں مواد لحمیہ یعنی پروٹین ہوتا ہے جوخون کی پیدائش اور جسم کی تعمیر میں اہم حصہ لیتا ہے۔ بادام میں موجود مواد لحمیہ کی مقدار گوشت اور مچھلی سے زیادہ ہوتی ہے۔ بادام میں جسم کے افعال درست رکھنے والے اور صحت کے محافظ اجزا بھی نہایت وافر مقدار میں پاۓ جاتے ہیں۔

اس میں گاۓ کے گوشت سے دس گنی وٹامن بی 1 (تھیامین)، انڈوں سے دو گنی مقدار میں وٹامن بی 2 (ریبوفلیون)، اور سالم گندم کے برابر وٹامن بی 3 (نیاسین) ہوتی ہے۔ اس کے اندر حفیف مقدار میں وٹامن (ای) بھی پائی جاتی ہے۔ معدنیات کےاعتبار سے اس میں کیلسیم ہوتا ہے جو ہڈیوں اور دانتو‌ں کے استحکام اور نشوونما کیلیے لازمی ہے۔

بادام حاملہ عورتوں کی حفظ صحت اور جنین (اخصاب کے عمل سے لیکر ماں کے پیٹ میں آٹھویں ہفتے کے اختتام تک کی حالت) کی بالیدگی کے لیے لازمی، نوجوانوں اور بوڑھوں کے قلب کو توانا رکھنے کیلیے نہایت ضروری ہے۔ بادام میں پنیر کے برابر فاسفورس بھی ہوتا ہے اور معدنیات کے لحاظ سے آئرن کی مقدار بکرے کے گوشت سے بھی زیادہ ہوتی ہے۔

بادام کے فائدے

σ

گلے کو صاف کرتا ہے اور خراش کو دور کرتا ہے۔

σ

ہر روز رات کو سوتے اگر بارہ گریاں بادام کی استعمال کی جائیں تو صبح کو اجابت آسانی سے اور کھل کر ہو گی۔ جن حضرات کا معدہ کمزور ہو، وہ سات عدد بادام کے ساتھ چھ ماشہ سونف اور چھ ماشہ مصری پیس کر سوتے وقت گرم دودھ کے ساتھ استعمال کریں۔

σ

دائمی قبض کے لیے بادام کا متواتر استعمال بے حد مفید ہے۔

σ

سات عدد بادام، ایک تولہ مصری کے ساتھ رات کو سوتے وقت کھا لیا کریں اس سے آپ کی نظر تیز ہو جاۓ گی اور دماغ کو بھی طاقت میسر ہو گی۔

اکیس عدد بادام ہر روز چبا کر کھا لیا کریں اس طرح آپ کی آنکھوں سے پانی بہنا بند ہو جاۓ گا۔

σ

سات عدد بادام کی گریاں، مصری چھ ماشہ، چھ ماشہ سونف کو کوٹ کر سفوف تیار کر لیں اور ہر روز رات کو گرم دودھ کیساتھ استعمال کریں مگراس کے بعد پانی کا استعمال منع ہے۔ یہ نسخہ متواتر استعمال کرنے سے یقینی طور پر عینک سے چھٹکارا مل جائیگا۔

σ

یرقان کا مرض رنگت کو زرد کر دیتا ہے، مریض کی آنکھیں اور پیشاب بالکل زرد ہو جاتا ہے بلکہ مرض پرانا ہو جانے پر ناخن اور تمام بدن پر بھی زردی آ جاتی ہے۔ اس کیلۓ بادام کی ٹھنڈائی کا استعمال بے حد مفید ہے۔

σ

اگرحاملہ عورت ساتوں مہینے سے چھوٹا چمچہ روغن بادام رات کو سوتے وقت پینا شروع کر دے تو بچہ کی پیدائش میں سہولت ہوتی ہے۔

σ

متواتر اکیس دن کے با پرہیز استعمال سے ضعف دماغ کی شکایت دور ہو جاتی ہے۔

σ

ایک خوراک جو اگر مندرجہ ذیل طریقے سے بنائی جاۓ، جسے بوقت صبح کھا لینے سے طبیعت تمام دن مسرور رہتی ہے۔ نسخہ تیار کرنے کا طریقہ یہ ہے: بادام سات عدد، الائچی چارعدد، عمدہ چھوارہ ایک مصری پانچھ تولہ، اور گاۓ کا مکھن پانچھ تولہ لیجیۓ۔ اب بادام اور چھوہارہ کو رات کے وقت مٹی کے کورے برتن میں پانی ڈال کر بھگو دیں صبح باداموں کو چھیل لیں اور چھوہارہ کی گٹھلی کو دور کریں۔ الائچی کے دانہ کو نکال لیں اور خوب پیس لیں۔ پھر مصری ملا کر باریک کریں، آخر میں مکھن ملائیں اورنوش فرمائیں۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*