Bacho Ko Is Cheez Se Door Rakhain

پلاسٹک کی اشیائی میں موجود خطرناک کیمیکلز انسانی صحت کے لیے انتہائی مضر ہوتے ہیں اور کئی طرح کی بیماریوں کا سبب بنتے ہیں ۔
اب سائنسدانوں نے ان کا ایک ایسا نقصان بتادیا ہے کہ حاملہ اور بچے اور دود ھ پلانے کی خواتین ان کو ہاتھ بھی نہیں لگائیں گی ۔ سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ پلاسٹک بیگز میں Bisphenol A نامی موذی کیمیکل پایا جاتا ہے ۔ اگر حاملہ خواتین یا بچوں کو دودھ پلانے والی مائیں اس کیمیکل کی زد میں آجائیں تو ان کے بچے کے تمام عمر کے لیے معدے کے مسائل سے دو چار ہونے کے امکانات بہت زیادہ ہو جاتے ہیں ۔

ڈاکٹروں کا کہنا تھاکہ یہ کیمیکل بچوں کے معدوں میں موجود اچھے اور برے بیکٹیریا کے توازن میں بگار پیدا کر دیتا ہے جو تمام عمر ٹھیک نہیں ہوپاتا ۔ بچوں کا دودھ پلانے والی ماؤں کے لیے بھی یہ اتنا ہی خطرناک ہے کیونکہ یہ ماں کے دودھ کے ذریعے بچے میں منتقل ہونے کی صلاحیت بھی رکھتا ہے ۔

چنانچہ حاملہ اور بچے کو دودھ پلانے والی خواتین کو چاہیے کہ کھانے پینے کی ایسی اشیاء ہر گز مت کھائیں جو پلاسٹک کی پیکنگ میں آتی ہیں ۔ کھانے کی اشیاء لانے کے لیے شیشے یا اسٹیل کے برتن استعمال کیے جانے چاہئیں تاکہ آپ کے بچے اس دائمی مرض سے محفوظ رہ سکیں ۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*