Amazing Beneftis of Amla

آملہ بے پناہ خصوصیات کا حامل ایک مشہور پھل ہے ۔ اس میں وٹامن سی کا خزانہ چھپا ہوا ہے ، کہتے ہیں کہ ایک درجن مالٹوں میں جتنا وٹامن سی ہوتا ہے وہ صرف ایک لیموں میں پایا جاتا ہے جبکہ ایک بڑے آملے میں بارہ لیموں جتنا وٹامن سی ہوتا ہے ۔ ایک آملے میں وٹامن سی کی مقدار 7000سے 10000ملی گرام تک ہوتی ہے اس میں ٹینک ایسڈ اور کیلشیم بھی پایا جاتا ہے ، یہ جلد جزوبدن بنتا ہے اور بیکٹیریا کو تلف کرتا ہے ۔

حمل اور امراض قلب :
حمل کے دوران کچھ خواتین کے دل کی دھڑکن بڑھ جاتی ہے انہیں کمزوری محسوس ہونے لگتی ہے کام کاج میں دل نہیں لگتا ۔ ایسی خواتین کے لئے آملے کا مربہ تجویز کیا جاتا ہے ۔ حمل کے ابتدائی ایام میں چند ماہ روزانہ آملے کا مربہ چاندی کے ورق میں لپیٹ کر نہا ر منہ کھایا جائے تو دل کی دھڑکن اعتدال پر آجاتی ہے ۔ امراض قلب میں بھی اسے کامیابی سے استعمال کیا جاتا ہے ا س کے استعمال سے قوت مدافعت بڑھ جاتی ہے ۔

آنکھوں کے امراض :
آنکھوں کے بہت سے امراض میں آملے کا استعمال نہایت مفید ہے ۔ اگر آنکھو ں میں لالی ہو، جلن اور کھجلی ہو اور نظر کمزور ہو تو آملے کو موٹا کوٹ لیں، اس سفوف کا ایک چمچ رات کے وقت ڈیڑھ گلاس پانی میں بھگو دیں اور صبح ململ کے کپڑے سے چھان کر اس پانی سے آنکھیں دھوئیں ۔ اس کے علاوہ تازہ آملے کا رس نکال کر روئی میں لگا کر اس کا کاجل بھی بنا یا جاتا ہے جو آنکھوں کے لئے مفید ہوتا ہے ۔

بڑھاپے میں توانائی بخش :
آملے کو طویل عمر اور صحت و تندرستی کا کیپسول کہاجاتا ہے ، سیانے کہتے ہیں کہ ایک آملہ روزانہ کھانے والا فرد ہر مرض سے محفوظ اور اسی نوے سال کی عمر میں بھی چاق و چوبند رہ سکتا ہے ۔ بڑھاپے کی عمر میں بھی آملہ توانائی دیتا ہے ، جسم میں قوت مدافعت پیدا کرتا ہے ، انفیکشن سے محفوظ رکھتا ہے اور جسمانی قوت بحال رکھتا ہے ۔

سر چکرانے کے مرض میں مفید :
اگر اکثر سر چکراتا اور آنکھوں کے گرد اندھیرا چھاجاتا ہوتو دس گرام آملہ اور دس گرم خشک دھنیا لیں اور اسے رات کے وقت پانی میں بھگو دیں ، صبح اسے چھان کر پی لیں ، اسے خوش ذائقہ بنانے کے لئے اس میں تھوڑی سی چینی بھی ملائی جا سکتی ہے ، چند دنوں میں چکر کی شکایت دور ہو جائے گی ۔

دانتوں کی تکلیف اور زخم :
آملے کے سفوف میں تھوڑا سا نمک ملا کر دانتوں پر منجن کی طرح ملیے اس سے دانتوں کا میل صاف ہوگا، دانت مضبو ط ہوں گے اور مسوڑھوں سے خون آنا بھی بند ہو جائے گا ۔

Be the first to comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.


*